News

Taufah mah-e-ramazaan

AW048-frontتحفہ ماہ رمضان

حضرت مولانا شاہ حکیم محمد اختر صاحب نور اللہ مرقدہ

قرآن و حدیث میں مومن کامل کی سب سے بڑی پہچان اس کا متقی ہونا بتائی گئی ہے۔ اللہ تعالیٰ نے اپنے متقی بندوں کے لیے دنیا اور آخرت میں جن انعامات کا وعدہ فرمایا ہے ان کو غیر متقی نہیں پاسکتا۔ یہی وجہ ہے اللہ نے اپنے جن بندوں کو فہم و فراست سے نوازا ہے ان کی زندگی کا سب سے بڑا مقصد یہی ہوتا ہے کہ اللہ تعالیٰ ایک لمحہ بھی ناراض نہ ہوں۔اسی تقویٰ کے حصول کے لیے اللہ تعالیٰ کا ارشاد ہے کہ مسلمانوں پر روزے فرض کیے گئے ہیں تاکہ وہ تقویٰ اختیار کریں اور دوسری جگہ ارشاد فرماتے ہیں کہ تقویٰ اختیار کرو اور اس کے لیے متقی لوگوں کی صحبت میں رہو۔

شیخ العرب والعجم مجدد زمانہ عارف باللہ حضرت اقدس مولانا شاہ حکیم محمد اختر صاحب رحمۃ اللہ علیہ نے اپنے وعظ ’’ تحفہ ماہ رمضان‘‘ میں بیان فرمایا ہے کہ جیسے پہاڑ پر چڑھتے ہوئے ریل گاڑی کے آگے پیچھے انجن لگتے ہیں تاکہ چڑھائی کا راستہ آسانی سے طے ہوجائے۔ اسی طرح اگر کوئی ماہ رمضان کسی اللہ والے، متقی بندے کی صحبت میں گزارے تو قرآن پاک کی ان دو آیات کی رُو سے اسے تقویٰ کے دو انجن میسر آجاتے ہیں، ایک رمضان المبارک کے مہینے کا، دوسرا متقی بندے کی صحبت کا۔ اس طرح اس کے متقی بننے کی راہ تیزی سے طے ہونے لگے گی

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Free WordPress Themes - Download High-quality Templates