News

Islah e akhlaq

AT001-frontاصلاحِ اخلاق

حضرت مولانا شاہ حکیم محمد اختر صاحب نور اللہ مرقدہ

حدیث پاک میں ہے کہ قیامت کے دن سب سے وزنی عمل اچھے اخلاق ہوں گے۔ اخلاق کی حقیقت یہ ہے کہ ہم سے کسی کو کسی قسم کی ایذا اور تکلیف ظاہری یا باطنی، سامنے یا پیٹھ پیچھے نہ پہنچے۔ اچھے اخلاق کی وہ صفات جن کو اپنانا چاہیے چند یہ ہیں، فرائض و واجبات ادا کرنا، سنتوں پر عمل کرنا، سچ بولنا، سخاوت کرنا، سب کو اپنے سے بہتر سمجھنا، عاجزی اور انکساری اختیار کرنا، وعدہ پورا کرنا، اللہ تعالیٰ کی محبت حاصل کرنا اور اس کے لیے بزرگوں کے پاس جانا اور ان کی دینی مجالس میں بیٹھنا وغیرہ اور وہ بری باتیں جن سے بچنا چاہیے ان میں سے چند یہ ہیں، جھوٹ بولنا، غیبت کرنا، چغل خوری کرنا، بدنظری کرنا، دھوکہ دینا، وعدہ خلافی کرنا، بددیانتی کرنا وغیرہ۔

زیر نظر رسالہ ’’اصلاحِ اخلاق‘‘شیخ العرب والعجم عارف باللہ مجددِ زمانہ حضرت اقدس مولانا شاہ حکیم محمد اختر صاحب رحمۃ اللہ علیہ کی تالیف ہے۔ حضرت اقدس نے اس رسالے میں قرآن و حدیث کی روشنی میں بُرے اخلاق سے بچنے اور اچھے اخلاق حاصل کرنے کے نسخے بیان فرمائے ہیں۔ اس رسالے کے مطالعے سے ہر شخص کو اخلاق کے باب میں اپنی کمی اور خامی کا علم ہوتا ہے اور اس کو دور کرنے کی فکر پیدا ہوجاتی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Free WordPress Themes - Download High-quality Templates